تبلیغات
پیروان خط ولایت فقیه پاکستان - نائجیریا ، شیعہ عوام کو فائرنگ کرکے شہید کرنے پر عالمی طاقتوں کی خاموشی افسوس ناک ہے ،علامہ ساجد نقوی
آقای سید ساجد علی نقوی شروع هی سے ایک متحرک ،محنتی ،زحمت کش، اور مومن مرد ہیں.امام خامنه ای

نائجیریا ، شیعہ عوام کو فائرنگ کرکے شہید کرنے پر عالمی طاقتوں کی خاموشی افسوس ناک ہے ،علامہ ساجد نقوی

یکشنبه 29 آذر 1394 06:53 ب.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: نماینده ولی فقیه علامه ساجد نقوی ،
IMG_0553

بین الاقوامی ادارے نائجیرمیں ظلم روکنے سمیت شیعہ رہنما شیخ زکزاکی کی رہائی کیلئے کر دار اداکریں، قائد ملت جعفریہ پاکستان
نائجیریا میں فوج کی جانب سے بے گناہ عوام کے قتل و غارت و تشددکو رکوانے کیلئے پاکستانی صدر اور وزیر اعظم اپنا سفارتی کردار ادا کریں ۔
سقوط ڈھاکہ پاکستان قومی تاریخ کا المیہ ہے لیکن اب تک اس کے حقائق منظر عام نہیں لائے جاسکے اور نہ ہی ذمہ داروں کو سزاؤں سے دو چا رکیاگیا
قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے نائجیریا فوج کا شیعہ رہنما شیخ زکزاکی پرآمرانہ و ظالمانہ تشدد کرکے انتہائی زخمی حالت میں بلاجواز گرفتارکرنے اور سینکڑوں شیعہ عوام کے قتل عام پروگہرے دکھ و افسوس کا اظہار اور واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نائجیریا میں انسانیت کے بے رحمانہ قتل و آمرانہ تشدد پر بین الاقوامی اداروں، یو این او، او آئی سی سمیت تمام عالمی طاقتوں کی خاموشی کو افسو س ناک ہے۔ بین الاقوامی ادارے فی الفور شیعہ رہنما شیخ زکزاکی کو نائجیریا فوج سے رہا کرانے میں اپنا مثبت کر دار ادا کریں۔ علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہا کہ نائجیریا فوج کی جانب سے شیعہ رہنما شیخ زکزاکی کے گھرکومارٹر گولوں سے نشانہ بنانے اور مسمار کرنے سمیت سینکڑوں لوگوں کو شہید کرکے انکی لاشیں ٹرکوں میں ڈال کر جائے وقوعہ سے کہیں اور منتقل کردینا انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔ انہوں نے پاکستانی صدر اور وزیر اعظم سے کہا ہے کہ نائجیریا میں فوج کے ہاتھوں بے گناہ عوام کے قتل و غارت و تشددکو رکوانے سمیت شیعہ رہنما شیخ زکزاکی کی رہائی کیلئے کیلئے وہ اپنا مثبت سفارتی کردار ادا کریں ۔علاوہ ازیں علامہ ساجد علی نقوی نے مزید کہا کہ سقوط ڈھاکہ پاکستان کی قومی تاریخ کا المیہ ہے لیکن یہ ستم ظریفی ہے کہ اب تک اس کے حقائق منظر عام نہیں لائے جاسکے اور نہ ہی اس کے ذمہ داروں کو کڑی سزاؤں سے دوچار کیا گیا۔ اس وقت بھی وطن عزیز تاریخ کے نازک ترین دور سے گزر رہا ہے اور تمام محب وطن حلقوں کے لئے ضروری ہے کہ موجودہ حالات میں 1971 کی غلطیوں کو دہرانے سے سختی سے اجتناب کیا جائے اور باہم متحدہوکر پاکستان دشمن قوتوں کا داخلی اور خارجی محاذ پر مقابلہ کیا جائے۔




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : یکشنبه 29 آذر 1394 06:54 ب.ظ