تبلیغات
پیروان خط ولایت فقیه پاکستان - مطالب شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان
آقای سید ساجد علی نقوی شروع هی سے ایک متحرک ،محنتی ،زحمت کش، اور مومن مرد ہیں.امام خامنه ای

اسلامی تحریک کے نائب صدر شیخ مرزا علی کی صدارت میں پیام شہداء کانفرنس نگر میں منعقد ہوئی

سه شنبه 29 تیر 1395 08:34 ب.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
13734615_1042994422451942_1449999411_n

پیام شہداء کانفرنس نگر گگلت شہدائے ملت جعفریہ پاکستان بالخصوص سرزمین پاکستان کے دفاع کے دوران پاک آرمی کے شہداء جن کا تعلق وادی شہدائے نگر سے تھا ان تمام شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے (ساس) وارثانِ شہداء کی جانب سے عظیم الشان پیام شہداء کانفرنس ویلی اسقرداس میں منعقد کی گئی قائد ملت جعفریہ پاکستان آیت اللہ سید ساجد علی نقوی کو اس کانفرنس میں خصوصی شرکت کرنی تھی مگر فلائٹ کی عدم دستیابی کے باعث تشریف نہ لاسکے جس کی وجہ سے کانفرنس کی صدرات مرکزی نائب صدر اسلامی تحریک پاکستان ،شیعہ علماء کونسل شیخ مرزا علی نے کی

جبکہ دیگر مقررین نے میں شیعہ علماء کونسل گلگت ڈویژن کے صدر علامہ شیخ منیر حسین منوری،علامہ شیخ اعجاز حسین،شیعہ علماء کونسل گلگت کے رہنما شیخ اںصار حسین ،شیخ عبد الحسین،شیخ محمد عباس وزیری،رہنما مجلس وحدت مسلمین شیخ موسی کریمی اور علامہ شیخ عابدین نائب خطیب جامعہ امامیہ کھارادر کراچی اسلامی تحریک کے منتخب رکن اسمبلی محمد علی شیخ، اسلامی تحریک بلتستان کے منتخب رکن اسمبلی و چیرمین پبلک اکاونٹس کمیٹی کیپٹین ریٹائرڈ اسکندر علی، مجلس وحدت المسلمین کے منتخب رکن اسمبلی حاجی رضوان علیعلامہ شیخ محمد اقبال توسلی علامہ شیخ شبیر حسین حکیمی نے بھی خطاب کیا

علامہ شیخ مرزا علی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ہی پاکستان بنایا، ہم نے ہی پاکستان پر اپنا سرمایہ لگایا ہم نے ہی پاک آرمی کے جھنڈے تلے کئی جنگوں میں پاکستان کی سرزمین کا دفاع کرتے ہوئے اپنی جانیں قربان کیں،وہ ہم ہی ہیں جنہوں نے گلگت بلتستان کو ڈوگرہ سے آزاد کروا کر پاکستان کے ساتھ الحاق کیا، ہم نے ہی ریاست پاکستان کے اندر مختلف مسالک اور فرقوں کے درمیان اتحاد و وحدت کا نعرہ لگایا اور دنیا بھر کے لیئے وحدت امت کی مثال قائم کی۔ مگر افسوس کہ ہم پر ہی کفر کے فتوے لگ رہے ہیں، ہمیں ہی بسوں سے اتار کر اور شناخت کر کے قتل کیا جاتا ہے، ہم پر ہی عذاداری کے حوالے سے دباو ڈالا جاتا ہے۔ ہمارے ہی بے گناہ شیعہ جوانوں کو توازن کی ظالمانا پالیسی کے تحت نانگا پربت جیسے واقعات میں ملوث دہشت گردوں کے ساتھ موازنہ کروا کر مجرم ثابت کرنے کی کوشش کی جاتی ہے۔ میں سوال کرتا ہوں کہ کہا ں ہے ریاست پاکستان، کہاں ہے ریاست کے وہ مقتدر ادارے جو عدل و انصاف کے ذمہ دار ہیں۔ ہم آج میں پر امید ہیں کہ انصاف کرنے والے ادارے اور افراد اس ریاست میں موجود ہیں اور وہ انصاف کرینگے، اور اگر ایسا نا ہوا تو یہ عدل و انصاف کا قتل ہوگا۔




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : سه شنبه 29 تیر 1395 08:35 ب.ظ

عالمی اداروں کو کشمیر میں بھارتی سفاکیت کیوں نظر نہیں آتی،علامہ عارف واحدی

سه شنبه 29 تیر 1395 08:31 ب.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
IMG_5184
کشمیریوں کی اخلاقی وسیاسی حمایت جاری رکھیں گے، شیعہ علماء کونسل
عالمی اداروں کو کشمیر میں بھارتی سفاکیت کیوں نظر نہیں آتی،علامہ عارف واحدی

مقبوضہ کشمیر میں40 سے زائد افراد شہید کردیئے گئے، کسی کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگی،مرکزی سیکرٹری جنرل
راولپنڈی / اسلام آباد19 جولائی 2016ء ( )شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے کہاہے کہ مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی سفاکیت اور عوام کی مظلومیت عالمی اداروں کو کیوں نظر نہیں آتی، حقوق بشیریت کی تنظیمیں، اقوام متحدہ کیوں خاموش ہیں، او آئی سی کیا اپنا وجود بھی رکھتی ہے، چالیس سے زائد افراد شہید کردیئے گئے لیکن کسی کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگی ، حکومت مسئلہ کشمیر کو مزید موثر انداز میں اٹھائے، کشمیریوں کی اخلاقی اور سیاسی حمایت جاری رکھیں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم الحاق پاکستان کے موقع پر اپنے بیان اور مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ علامہ عارف حسین واحدی کا کہنا تھا کہ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کے حکم کی مکمل تائید کرتے ہیں جس میں انہوں نے مطالبہ کیاکہ مسئلہ کشمیر کو کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق حل کیا جائے اور تمام فریقوں کو ان کی خواہشات کا احترام کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ حالیہ چند دنوں میں چالیس سے زائد نہتے کشمیریوں کو شہید کردیاگیا، کئی دہائیوں سے مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج ظلم و ستم کے پہاڑ ڈھا رہی ہے لیکن افسوس حقوق بشیریت کی عالمی تنظیمیں، اقوام متحدہ خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہیں جبکہ عالم اسلام کی نمائندہ تنظیم او آئی سی معلوم نہیں اپنا وجود بھی رکھتی ہے یا نہیں، اس معاملے پر اس نمائندہ پلیٹ فارم کی خاموشی بھی انتہائی افسوسناک ہے ۔

علامہ عارف حسین واحدی کا مزید کہنا تھا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کشمیریوں کو ان کا حق خود ارادیت دیا جائے، ان کی امنگوں کے مطابق فیصلہ کیا جائے، مسئلہ فلسطین و کشمیر عالم اسلام کے سلگتے مسائل ہیں، جنوبی ایشیاکا پائیدار امن بھی مسئلہ کشمیر سے جڑا ہے ۔ حکومت پاکستان مسئلہ کشمیر کو مزید موثر انداز میں اٹھائے ، اقوام متحدہ کو بھی چاہیے کہ اس سلسلے میں موثر اقدامات اٹھائے



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : سه شنبه 29 تیر 1395 08:34 ب.ظ

پارہ چنار انصار الحسین دفتر پر چھاپہ پارہ چنار انتظامیہ اور صوبائی حکومت کی نا اہلی ہے۔ علامہ حمید حسین امامی

سه شنبه 31 فروردین 1395 11:36 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
13016539_987887524629299_2140936266_o copy
پشاور  شیعہ علماء کونسل خیبرپختونخوا کے صوبائی صدر علامہ حمید حسین امامی نے پشاور صوبائی دفتر میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ انصار الحسین ایک فلاحی سماجی اور مذہبی ادارہ ہے اس کے دفتر پر چھاپہ لگانا قابل مذمت اقدام ہے۔ چونکہ انصار الحسین کے جوانان تعلیم فلاح و بہبود اور اتحاد بین المسلمین میں نمایا ں کردار ادا کر رہے ہیں ۔دہشت گردی اور فرقہ واریت عناصر کے بھی خلاف ہیں ۔جوانان انصار الحسین ہر میدان میں پاک آرمی کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں ۔

مقامی انتظامیہ کو چاہیے کہ ان کے ساتھ تعاون کرے۔نہ کہ دفتر پر چھاپے لگا کر گرفتاریاں کریں۔شیعہ علماء کونسل کے صوبائی صدر علامہ حمید حسین امامی نے گورنر ،چیف سیکرٹری،ہوم سیکرٹری خیبر پختونخوا سے پر زور مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ پارہ چنارانتظامیہ کی نا اہلی کانوٹس لیا جائے ۔ اور ان کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے ۔



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : سه شنبه 31 فروردین 1395 11:36 ق.ظ

حکمرانوں کی کرپشن کے بڑےبڑے اسکینڈل منظر عام پر آرہے ہیں(علامہ سید ناظر عباس تقوی

سه شنبه 31 فروردین 1395 11:35 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
13016539_987887524629299_2140936266_o
پانامہ لیکس عوام کی کمائی ہوئی خون پسینے کی محنت اور دولت ہے (علامہ سید ناظر عباس تقوی)

کراچی(اسٹاف رپورٹر)شیعہ علماء کو نسل صوبہ کے صدر علامہ سید ناظر عباس تقوی کا کہنا ہے کہ پاکستان میں بڑھتی ہوئی مہنگائی نے عوام کا چین و سوکھ چھین لیا ہے مہنگائی کی وجہ سے عوام اپنے بچوں کو بنیادی سہولیات دینے سے قاصر ہے عوام کا سب سے بڑامسئلہ تعلم ،صحت اور بجلی ہے جو حکمران اب تک عوام کو بنیادی سہولتیں دینے میں ناکام نظر آتے ہیں منتقلی اقتدار کا سلسلہ اس ملک میں سہالہ سال سے جاری ہے لیکن عوام کو ریلیف دینے کے لئے حکومت کے پاس کوئی پالیسی موجود نہیں زبانی دعوے مختلف پروجیکٹوں کے فیتے کاٹنے کے علاوہ حکمرانوں کے پاس کچھ بھی نہیں ہیں ۔ایک طرف عوام اپنے بچوں کی تعلم اور غزا ء کے لئے پریشان نظر آرہی ہے دوسری طرف حکمرانوں کی کرپشن کے بڑےبڑے اسکینڈل منظر عام پر آرہے ہیں پانامہ لیکس عوام کی کمائی ہوئی خون پسینے کی محنت اور دولت ہے کوئی سیاست دان سرے کا محل خر یدتاہے اور کوئی سیاست دان اربوں ڈالرزبیرون ملک سوئس بینکوں میں منتقل کررہا ہے لیکن عوام کا کوئی ایک مسئلہ حل نہیں ہوا گزشتہ 15سالوں میں حکومت نے بجلی کے خاتمے کے لئے بڑے بڑے اعلانات اور دعوے کئے لیکن اس وقت شہری علاقوں کی صورت حال یہ ہے دس سے بارہ گھنٹےلوگ بجلی سےمحروم ہے جب کہ گائوں اور دیہا توں میں اٹھارہ اٹھارہ گھنٹوں کی لود شیٹنگ کا سلسلہ جاری ہے عوام ذلت آمیز زندگی گزارنے پر مجبور ہے ریاست پاکستان ستوں پی کر سورہی ہے عوام کو کسی کی کو ئی فکر نہیں ہے اسی صورتحال کی وجہ سے سرمایہ دار پڑھالکھا طبقہ ملک چھوڈنے پر مجبور ہے نہ بنیادی مسائل اس ملک میں حل کئے جارہے ہیں نہ دہشت گردی کا مسئلہ کسی منطقی انجام تک پہنچاتا نظر اآرہا ہے ملک کی فضاء میں روزانہ ایک نیا شاخسانہ اُٹھایا جارہا ہے اور اصل عوامی مسائل کو پسِ پشت ڈال دیا جاتا ہے لگتا ایسا ہے کہ یہ سب بڑی پلنگ سے کیا جارہا ہے تاکہ عوامی مسائل کی طرف لوگ متوجہ نہ ہوسکے لوگ غربت سے تنگ آکر خود کشی کرنے اور اپنے بچوں کو بیچنے پر مجبور ہوگئے ہیں کیا یہی وہ پاکستان تھا کہ جسکا خواب قائد اعظم محمد علی جناح نے دیکھا تھا۔



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : سه شنبه 31 فروردین 1395 11:36 ق.ظ

جی بی کونسل کے انتخابات میں اسلامی تحریک کی کامیابی ملی پلیٹ فارم کی کامیابی ہے،علامہ عارف واحدی

سه شنبه 31 فروردین 1395 11:33 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
1977374_406842889466154_5808871889898060335_n

اسلامی تحریک پاکستان کے مرکزی سیکرٹر ی جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے’’ گلگت بلتستان‘‘ قانون ساز اسمبلی کے کونسل ممبرا ن کے انتخابا ت میں اسلامی تحریک پاکستان کے نامزد اُمیدوار آغا سید محمد عباس رضوی کی کامیابی کو ملی پلیٹ فارم کی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسلامی تحریک پاکستان ’’ گلگت بلتستان‘‘ کی ترقی و خوشحالی کیلئے اہم کر دار ادا کر رہی ہے ۔اوراسلامی تحریک پاکستان کے اراکین اپوزیشن نشستوں پر بیٹھ کر مثبت انداز میں بلا تفریق عوامی خدمت میں مصروف عمل ہیں ۔

علامہ عارف حسین واحدی نے اسلامی تحریک پاکستان کے نامزد اُمیدوارو اسلای تحریک پاکستان کے صوبائی صدر گلگت بلتستان آغا سید محمد عباس رضوی کی رکن کونسل گلگت بلتستان منتخب ہو نے پر اسلامی تحریک پاکستان کے سربراہ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی ، چاروں ممبران کیپٹن (ر) محمد شفیع ،کیپٹن (ر)محمدسکندر علی ،شیخ محمد علی حیدر،محترمہ ریحانہ عبادی اور گلگت بلتستان قانون اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر جمعیت علماء اسلام کے رہنما حاجی شاہ بیگ،گلگت بلتستان کے عہدیداران و کارکنان کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس عمل سے علاقہ میں اتحاد و وحدت کو فروغ ملے گااور گلگت بلتستان کی پُرامن فضاء میں مزید بہتری آئے گی ۔

علامہ عارف واحدی نے مزید کہا کہ ہم سیاسی میدان عمل میں عملاًموجود ہیں اور عوام کے فلاح و بہبود و ترقی کیلئے مثبت کر دار ادا کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہماری جماعت کی جانب سے نے ملک بھر کے مختلف علاقوں سمیت گلگت بلتستان میں اپنی مدد آپ کے تحت ترقیاتی کاموں کا سلسلہ جاری و ساری ہے ۔ ضلع نگر میں عوام کو بجلی کی سہولت بہم فراہم کرنے کے لئے اہلیان علاقہ اور اسلامی تحریک پاکستان کے مرکزی رہنما علامہ ڈاکٹر شبیر حسن میثمی و دیگر ان ذمہ داران کے تعاون وسرپرستی کے باعث پن بجلی گھر کا منصوبہ پایا تکمیل تک پہنچا ، جس کے باعث ایک دیہات کے 200گھربجلی کی سہولت سے مستففید ہو رہے ہیں جبکہ ضرورت کے وقت مزید 5دیہاتو ں600گھروں کوبجلی مہیا کرنے کی صلاحیت موجود ہے ۔آخر میں علامہ عارف حسین واحدی نے کہا کہ علاقے کی ترقی و خوشحالی میں اسلامی تحریک اپنا بھر پو ر کر دار ادا کرتی رہے گی ۔




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : سه شنبه 31 فروردین 1395 11:34 ق.ظ

اسلامی تحریک کی گلگت بلتستان کونسل میں کامیابی کو اصولوں کی کامیابی قرار دیا جا سکتا ہےشیخ مرزا علی

سه شنبه 31 فروردین 1395 11:32 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
22290_480646945419081_3852214060472081629_n

اسلامی تحریک پاکستان ،گلگت بلتستان کونسل کے تمام نو منتخب ممبران کو مبارکباد پیش کرتی ہے اور امید رکھتی ہے کہ جی بی تاریخ کے نازک موڑ پر کھڑا ہے ایسے میں ممبران کونسل کی ذمہ داریاں کہیں بڑھ جاتی ہیںآئینی حیثیت کا تعین، اقتصادی راہداری کی کامیابی اورسی پیک میں گلگت بلتستان کا معقول حصہ سمیت اہم ایشوز اور کونسل سے متعلق موضوعات میں استحکام پاکستان کے پیش نظر جی بی کی مکمل نمائندگی میں بھر پور کردار ادا کریں گے ۔

اسلامی تحریک کی گلگت بلتستان کونسل میں کامیابی کو اصولوں کی کامیابی قرار دیا جا سکتا ہے اور تحریک کا ملک میں اور جی بی میں مذہبی ہماہنگی اور احترام کی سیاست کے سبب آج اس مقام پر پہنچی کہ ملک کی بڑی سیاسی جماعتوں نے بھی اعتماد کا اظہار کیا جو اسلامی تحریک کے مثبت کردار کی نشاندہی کرتا ہے

ان خیالات کا اظہار شیخ مرزا علی نے اپنے ایک اخباری بیان میں کیا اور مزید کہا کہ اسلامی تحریک پاکستان نے ہمیشہ سے رواداری ،احترام اور مفاہمت کا کردار ادا کیا اور ہمیشہ سیاسی اصولوں پر کاربند رہی اور انتخابی عمل میں بھی جماعت کے منشور کے پیش نظر میدان میں اتری جس کا نتیجہ بھی مثبت رہا اور جی بی کونسل کے انتخابات کے موقع پر بھی الیکشن کے اصولوں اور قواعد کی پابند رہی جس کی وجہ سے مسلم لیگ نے بھی تعاون کی پیشکش کی اور پیپلز پارٹی نے بھی پیشکش کی جو اصولی سیاست کی فتح ہے .جمعیت علماء اسلام کے ممبر اسمبلی و اپوزیشن لیڈر کی جانب سے اسلامی تحریک پاکستان کے امید وار کی حمایت جی بی کے عوام کیلئے ایک مثبت پیغام ہے اور امید رکھی جاتی ہے کہ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی اور امیر جمعیت علماء اسلام پاکستان مولانا فضل الرحمن کا ملکی سطح پر اتحاد امت کے ثمرات گلگت بلتستان تک پہنچیں گے اور بین المسالک خوشگوار فضا قائم کرنے میں دونوں جماعتیں کلیدی کردار ادا کرینگیں۔




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : سه شنبه 31 فروردین 1395 11:33 ق.ظ

اسلامی تحریک پاکستان گلگت بلتستان کونسل کے ہونے والے انتخابات کی شفافیت کی امید رکھتی ہےشیخ مرزا علی

یکشنبه 29 فروردین 1395 07:24 ب.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
Untitled-1 copy
اسلامی تحریک پاکستان نے گلگت بلتستان کونسل کیلئے صوبائی صدر آغا سید محمد عباس رضوی کو امیدوار بنایا ہے اور اسلامی تحریک کے چاروں معزز ممبران جی بی قانون ساز اسمبلی متفق ہیں اور متفقہ طور پر جماعت کے امیدوار کی کامیابی کیلئے کوشاں ہیں اور بعض ذرائع ابلاغ میں اسلامی تحریک کے ممبران کی تقسیم کا تاثر دیا جا رہا ہے جس میں کوئی صداقت نہیں ہے ۔اسلامی تحریک پاکستان گلگت بلتستان کونسل کے ہونے والے انتخابات کی شفافیت کی امید رکھتی ہے اور الیکشن کمیشن سے توقع رکھتی ہے کہ الیکشن کے قواعد و ضوابط کو یقینی بنائے گی۔



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : یکشنبه 29 فروردین 1395 07:25 ب.ظ

حقوق نسواں کے معاملے کو حل کرنے کے لئے علماء کرام کی کمیٹی قائم شیعہ علماء کونسل کے مرکزی سکریٹری جنرل علامہ عارف واحدی کی اجلاس میں خصوصی شرکت

شنبه 21 فروردین 1395 10:29 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
s
حقوق نسواں کے معاملے کو حل کرنے کے لئے علماء کرام کی کمیٹی قائم شیعہ علماء کونسل کے مرکزی سکریٹری جنرل علامہ عارف واحدی کی اجلاس میں خصوصی شرکت کمیٹی نےحقوق نسواں بل میں اصلاح کے لئےسفارشات مرتب کی ہیں تاکہ قانون میں قرآن و سنت کے خلاف کوئی شق باقی نہ رھے کمیٹی میں علامہ عارف حسین واحدی اور حافظ کاظم رضا نقوی بھی شامل

اجلاس میں وزیر قانون رانا ثناء اللہ سمیت دیگر افسران اور حکومتی شخصیات موجود تھیں وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کا کہنا تھا کہ میں شکریہ ادا کرتا ہوں کہ علماء کرام نے ہمیں متوجہ کیا ہم سوچ بھی نہیں سکتے کہ قرآن و سنت کے خلاف کوئی قانون سازی کریں آپ علماء کرام نے علمی تحقیق کرکے جو سفارشات مرتب کیں ہیں ان پر عملدرآمد ہوگا

علامہ عارف واحدی نے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا جو اسلامی خاندانی نظام ہے وہ ایک جامع نظام ہے عورت کو جو حقوق اسلام و قرآن نے دئے ہیں ایسے حقوق دنیا میں موجود کسی قانون میں موجود نہیں قطعا اسلام عورت پہ تشدد کی اجازت نہیں دیتا ابھی بھی جو قانون میں اسلامی نظام سے متصادم شقیں ہیں انکو حذف کیا جائے تاکہ ایسا تاثر نہ دیا جائے کہ اس سے اسلامی خاندانی نظام تباہ ہوجائے گاوالدین، بیٹا،بیٹی ،بھائی بہن ،شوھر بیوی کے جو جامع حقوق اسلام نے دئے ہین ان کو کوئی زک نہ پہنچے

 علامہ عارف واحدی نے کہا کہ طریقہ کار یہ ہے کہ ایک آئینی ادارہ اسلامی نظریاتی کونسل موجود ہے جو بھی قانون سازی قرآن و سنت کے حوالے سے کرنی ہو تو اسلامی نظریاتی کونسل ،علماء کرام سے رائے لی جائے تاکہ بعد میں یہ غلط فہمیاں پیدا نہ ہوں ۔اجلاس میں وزیر اعلی شہباز شریف نے اس بات کی یقین دہانی کرائی کی حقوق نسواں بل کے حوالے سے بننے والی کمیٹی مستقل رہیگی اور آئندہ علماء کرام سے مشاورت کی جائے گی



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 21 فروردین 1395 10:30 ق.ظ

اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکرقانون ساز اسمبلی کے علم میں لائے بغیر رکن اسمبلی کیپٹین شفیع کی گرفتاری انتہائ قابل مذمت اور اسمبلی کی توہین ہے اسلامی تحریک

شنبه 21 فروردین 1395 10:28 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
Untitled-2 copy
پریس کانفرینس سے میں صوبائی صدر آغا سید محمد عباس رضوی، سینیئر نائب صدر دیدار علی، محمد علی شیخ سیکٹری جنرل، شیخ منیر حسین منوری ڈویژنل صدر اور دیگر اراکین شریک تھے۔

پریس کانفرینس سے خطاب کرتے ہوئے آغا سید محمد عباس رضوی نے کہا کہ مخصوص ایجنڈے کی تکمیل اور سیاسی مقاصد کے حصول کے لیئے اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکرقانون ساز اسمبلی کے علم میں لائے بغیر رکن اسمبلی کیپٹین شفیع کی گرفتاری انتہائ قابل مذمت اور قانون ساز اسمبلی کی توہین ہے۔ رکن اسمبلی کی گرفتاری کا مقصد علاقے میں انتشار پھیلانا ہے، حکومت ہمارے صبر کا امتحان نہ لے۔
ہم پرامن ماحول کے حامی ہیں اور مشکل کی اس گھڑی میں احتجاج کر کے بدامنی نہیں پھیلانا چاہتے، حکومت کیپٹین شفیع اور ان کے ساتھیوں کو فوری طور پر رہا کرے،

پریس کانفرینس سے خطاب کرتے ہوئے آغا عباس رضوی اور دیدار علی نے کہا کہ حالیہ بارشوں اور سیلاب نے گلگت بلتستان کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے،حکومت کی ذمہ داری تھی کہ وہ سیلاب متاثرین کی بھرپور مدد کرتی اور تمام طبقہ فکر کے لوگوں کو ساتھ لے کر چلتی مگر صوبائی حکومت انتقامی سیاست پر اتر آئی ہے اور ہمارے رکن اسمبلی جو کہ سیلاب متاثرین کی مدد کر رہا تھا ان پر انسدار دہشتگردی ایکٹ کے تحت مقدمات بنائے گئے جس کی وجہ سےرکن اسمبلی اور ممبران اسمبلی کا استحقاق مجروح ہوا ہے جو کہ ناقابل برداشت ہے،
کیپٹین شفیع نے ضلعی انتظامیہ، ڈی سی اور ڈیزاسٹر مینیجمینٹ اتھارٹی سے خصوصی درخواست کر کے اوشکھنداس کے متاثرین سیلاب کے لیئے ٹینٹ منظور کروائے، جبکہ متاثرین میں حکومت کی طرف سے دی گئی لسٹ کے مطابق ٹینٹ تقسیم کیئے گئے، مگر اس کو بعد میں غلط رنگ دیا گیا اور الٹا ممبر اسمبلی اور 18 دیگر متاثرین سیلاب کو جیل بھجوا دیا گیا، گرفتار افراد میں ایک گونگا بھی شامل ہے جس کا گھر متاثر ہوا ہے، ہمارے اراکین اسمبلی نے اس معاملے کو افہام و تفہیم کے ساتھ حل کرنے کی بھر پور کوشش کی مگر تا حال کوئ خاطر خواہ نتیجہ حاصل نہیں ہوا، کیپٹین ریٹائرڈ اسکندر علی اور محمد علی شیخ نے مسلم لیگ ن کے ذمہ داران سے رابطہ کیا جبکہ وزیر اعلی حفیظ الرحمان سے کو بھی صورتحال سے آگاہ کیا مگر اب تک کوئی پیش رفت نہیں ہوئ۔ انہوں نے کہا کہ یہ وقت احتجاج کا نہیں ہے اسلیئے حکومت فوری اقدام کرے۔



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 21 فروردین 1395 10:29 ق.ظ

(وزیرِ اعلی سندھ سید قائم علی شاہ اور آئی جی سندھ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کر کے ہیڈ کوارٹر میں مناسب جگہ پر شیعہ مسجد تعمیر کرائی جائے(علامہ ناظر عباس تقوی)

شنبه 21 فروردین 1395 10:19 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
Untitled-1 copy

کراچی اسٹاف رپورٹر)شیعہ علماءکونسل صوبہ سندھ کے صدر علامہ سید ناظر عباس تقوی کا کہنا ہے کہ گارڈن پولیس ہیڈ کوارٹر میں مکتبِ تشیع سے تعلق رکھنے والے پولیس ملازمین کے گھر والوں کی کثیر تعداد موجود ہونے کے باوجود انھیں مسجد کی سہولت سے محروم کرنا تشیع کے ساتھ سراسر زیادتی ہے جہاں اور مکاتبِ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کی عبادت گاہیں موجود ہیں وہاں شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے افراد کو بھی مسجد بنانے کی فوری اجازت دی جائے۔ مسجد نہ ہونے کے سبب لوگوں کو نمازِ پنجگانہ ، نمازِ عیدین اور نمازِ میّت پڑھنے میں ،بچوں کو قرآن پاک کی تعلیم نہ ملنے کے سبب شدید مشکلات کا سامنا ہے لہٰذا ہم وزیرِ اعلی سندھ سید قائم علی شاہ اور آئی جی سندھ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کر کے ہیڈ کوارٹر میں مناسب جگہ پر شیعہ مسجد تعمیر کرائی جائے۔ کچھ پولیس افسران تعصب کی بناءپر مسجد کی تعمیر میں رکاوٹ ڈال رہے ہیں اگر سیکورٹی فورسز کے اداروں میں اس طرح کی روش ڈالی گئی تو یہ نقصان کا باعث ہے۔ لہٰذا تمام تعصوبات سے بالا تر ہو کر شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے پولیس ملازمین کے لیئے جلد از جلد مسجد تعمیر کروائی جائے۔




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 21 فروردین 1395 10:20 ق.ظ

خیبر پختونخواہ اور گلگت بلتستان کی صوبائی حکومتیں بارش سے متاثرہ علاقوں میں ہنگامی اقدامات کریں علامہ عارف واحدی

شنبه 21 فروردین 1395 10:18 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
Untitled-2 copy
شیعہ علماء کونسل پاکستان کا گلگت بلتستان اور صوبہ کے پی کے میں بارشوں سے حالیہ جانی و مالی نقصان پر افسوس کا اظہار، سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے کہا کہ صوبائی حکومتوں کے ساتھ وفاقی حکومت کو بھی ہنگامی اقدامات اٹھانے چاہیں اور کارکنان امدادی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔صوبہ خیبر پختونخواہ اور گلگت بلتستان میں حالیہ بارشوں کے نتیجے میں ہونے والے جانی نقصان پر اظہار افسوس کرتے ہوئے علامہ عارف واحدی کا کہنا تھا کہ اس ہنگامیصورتحال میں جہاں کے پی کے اور گلگت بلتستان کی حکومتوں کو اپنی ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہنگامی اقدامات اٹھانا چاہئیں وہیں وفاقی حکومت کو بھی اپنے وسائل کوبروئے کار لاتے ہوئے متاثرین کی داد رسی کرنی چاہیے۔ اس موقع پر علامہ عارف واحدی نے کارکنوں کو بھی ہدایت کی کہ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کے حکم کے مطابق امدادی سرگرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں اور متاثرہ بھائیوں کی بھرپور ڈھارس بندھاتے ہوئے مدد کریں۔ دوسری جانب اسی سلسلے میں علامہ عارف واحدی نے اپنی جماعت کے گلگت بلتستان اسمبلی میں منتخب نمائندوں اور کے پی کے کے پارٹی عہدیداروں سے ٹیلی فونک رابطے کرکے انہیں امدادی سرگرمیوں کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس مشکل گھڑی میں ہمیں اپنے متاثرہ بھائیوں کی بھرپور امداد کرکے ڈھارس بندھانی چاہئے۔



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 21 فروردین 1395 10:19 ق.ظ

قائد ملت جعفریہ پاکستان کے خصوصی تعاون سے ضلع نگر میں بجلی گھر کا منصوبہ مکمل پانچ دیہاتوں کے 600خاندان مستفید ہونگے

شنبه 14 فروردین 1395 10:19 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
Untitled-1 copy
قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی مدظلہ العالی کے خصوصی تعاؤن اور سرپرستی سے پایہ تکمیل تک پہنچنے والا پن بجلی گھر کا منصوبہ، ضلع نگرکے گاؤں کونجوکوشل کے مومنین کے لیئے خوبصورت اور منفرد تحفہ

قائد ملت جعفریہ پاکستان و نمائندہ ولی فقیہ، علامہ سید ساجد علی نقوی مدظلہ العالی کی خصوصی سرپرستی اور تعاؤن سے گلگت ضلع نگر کے گاؤں کونجوکوشل میں تیار ہونے والا پن بجلی گھر کا منصوبہ پایہ تکمیل تاک پہنچ چکا ہے اور اس وقت گاؤں کے مؤمنین اس پن بجلی گھر سے استفادہ حاصل کر رہے ہیں۔ اس پن بجلی گھر سے اس وقت 1 دیہات کے 200 گھرانوں کو بجلی مہیا کی جارہی ہے، جبکہ ضرورت کے وقت مذید 5 دیہاتوں کے 600 گھرانوں کو بجلی میہا کرنے کی صلاحیت موجود ہے۔

اس منصوبے کی تکمیل کے لیئے قائد محبوب کی جانب سے 31 لاکھ روپے کی امداد کی گئی ہے، جبکہ گاؤں کے مؤمنین نے دیگر اخراجات کواپنی مدد آپ کے تحت پورا کیا۔ اس منصوبے کے حوالے سے ڈاکٹر علامہ شبیر حسن میثمی، مرکزی رہنما اسلامی تحریک پاکستان نے قائد محبوب کے حکم سے خاص طور پر جانی و مالی سرپرستی فرمائی۔۔ جبکہ علامہ شیغ مرزا علی مرکزی رہنماء اسلامی تحریک پاکستان اور علامہ شیخ شبیر حکیمی صاحب، رہنماء اسلامی تحریک ضلع نگر نےمنصوبے کے حوالے سے نگرانی فرمائ



نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 14 فروردین 1395 10:20 ق.ظ

شیعہ علماء کو نسل صوبہ سندھ کے صدر علامہ ناظر عباس تقوی کا خوجہ مسجد کھارادر کے با ہر احتجا جی مظاہرے سے خطاب

شنبه 14 فروردین 1395 10:18 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
1476091_611469359000412_5393633583271500133_n

کراچی(اسٹاف رپورٹر)شیعہ علماء کو نسل صوبہ سندھ کے صدر علامہ ناظر عباس تقوی نے خوجہ مسجد کھارادر کے با ہر احتجا جی مظاہرے سے خطاب کر تے ہوئے کہاں کہ گز شتہ کئی سا لوں سے سیکیو رٹی کے نام پر زائر ین کو کو ئٹہ میں پر یشان کیا جا رہا ہے جو ایک قا بل مذمت عمل ہے حکومت کی زمہ داری ہے کہ اپنے شہر یوں کا تحفظ کرے لیکن بلو چستان حکومت چند من پسند لو گوں کے سا تھ مل کر کر پشن کر رہی ہے اور معصوم لو گوں کو پر یشان کر رہی ہے زائرین کا یہ سلسلہ کو ئی نیا نہیں ہے بلکہ یہ بر سوں سے چلا آرہا ہے نہ ماضی میں یہ پہلے کبھی کو ئی روک سکا ہے نہ آئندہ کبھی روک سکے گا ہم اپنی جا نوں کے نذرانے تو دے سکتے ہیں لیکن کر بلا کی زیا رت سے پیچھے ہر گز نہیں ہٹھ سکتے

حکومت دو ک ٹوک فیصلہ کر کے بتا ئے کہ سیکیورٹی دے سکتی ہے کہ نہیں ورنہ ہم خود اپنی سیکیورٹی کے انتظامات کریں گے ایک طرف حکومت ملک کے حالات ٹھیک ہو نے کا دعو ہ کر تی ہے اور دوسری طرف لو گوں کو بلیک میل کر رہی ہے پا کستان کا کو ئی صوبہ کو ئی شہر یا کو ئی ادارہ ایسا نہیں کہ جس پر حملہ نہ ہوا ہو تو کیا ہم ملک کے تمام اداروں کو بند کرکے گھروں میں بیٹھ جا ئیں لہذاں جو سیکیورٹی وزیروں،مشیروں اور گورنروں کو دی جا رہی ہے تو کیا عوام کو سیکیورٹی دینا حکومت کی زمہ داری نہیں ہے ہم اس ملک کے شہری ہیں ہمارے تحفظ کی زمہ داری حکومت اور ریا ست کی ہے اگر زائرین کو با حفا ظت کو ئٹہ نہیں پہنچایا گیا اور مستقل بنیادوں پر سیکیورٹی کے اقدامات نہیں کیئے گے تو ہم اس احتجاجی دائرے کو پورے ملک میں پھیلا دیں گے سا نحہ لا ہور گلشن اقبال پارک میں ہو نے والا دھماکا حکومت کی غفلت اور بے حسی کا نتیجہ ہے اس ملک میں ایجنسیوں کا وسیع تر نیٹ ورک ہو نے کے باوجود اس طرح کے واقعات ایجنسیوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں سا نحات ہو نے کے بعد اُس واقعے کی تحقیقات کر نا کمیشن قائم کرنا یہ سب عوام کو دھوکہ دینے کی با تیں ہیں آج تک کسی تحقیقاتی کمیشن کی رپورٹ منظر عام پر نہیں آئی ہونا تو یہ چایئے سانحات ہو نے سے پہلے دہشت گردوں کو گرفتار کرکے مظلوم عوام کو بچایا جا سکے لیکن افسو س سینکڑوں جا نیں ضائع ہونے کے بعد لکیروں کو پیٹنا ہمارا شیوہ بن چُکا ہے قومی ایکشن پلان اور ضرب عضب آپر یشن کے باوجود اس طرح کے واقعات کا ہونا بہت سارے سوالات پیدا کرتے ہیں یہ بات خارج از امکان نہیں کہ اس واقعے کے پیچھے بیرونی ہاتھ بھی ہو سکتا ہے لا ہور دھماکا اس موقع پر کرایا گیا جب ایرانی صدر دورے کو ختم کر کے واپس گے کچھ قو تیں نہیں چاہتی کے ایران اور پا کستان کے تعلقات بہتر اور مستحکم ہو اور دونوں ممالک کے درمیان تجارت کے راستے بحال ہو سکے آرمی چیف جنرل راحیل شریف کی طرف سے پنجاب میں آپریشن کا اعلان خوش آئند ہے ضرب عضب کو پاکستان کے مختلف شہروں میں پھلایا جائے اور دہشت گردوں کے خلاف بھر پور ٹارگٹڈ آپریشن بلا تفریق پو رے ملک میں کیا جائے اور اس آپر یشن کو اس کے منطقی انجام تک پہنچایا جائے اس سے قبل علامہ کرم الدین و اعظی،علامہ جعفر سبحانی،علامہ رجب علی ہا تمی،علامہ فیصل مہدی اور یعقوب شہباز نے بھی خطاب کیا




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 14 فروردین 1395 10:19 ق.ظ

خیبر پختونخوا میں جھوٹے دعوؤں سے نہیں تبدیلی عوام کے بے گناہ خون سے آئے گی۔علامہ حمید حسین امامی

شنبه 14 فروردین 1395 10:11 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
Untitled-3 copy

شیعہ علماء کونسل خیبر پختونخو کے صوبائی صدر علامہ حمیدحسین امامی اور صوبائی جنرل سیکرٹری علامہ زاہد حسنین بخاری نے مشترکہ بیان جاری کرتے ہوئے صوبائی صدر علامہ حمید حسین امامی نے کہا خیبر پختوں خوا میں تبدیلی عمران خان اور صوبائی حکومت کے جھوٹ دعوؤں سے نہیں بلکہ تبدیلی عوام کے نہ حق خون بہنے پر خاموشی رہنے سے گی۔صوبہ میں کھلے عام دہشت گردی ہو رہی ہے ۔عوام کوپے در پے قتل کیا جارہا ہے صوبائی حکومت کے کانوں میں جوں تک نہیں رینگتی۔کیا صوبائی حکومت کراچی کی طرح کے حالات پید ا تو نہیں کر رہی وہاں پر بھی دہشت گردوں کوسیاسی جماعتوں کی پشت پناہی حاصل ہوتی ہے ۔

پشاور میں پرنسپل icms کالج پروفیسر عابد رضا کو دن ڈیہاڑے مین شاہراہ پر پولیس کے دیکھتے ہو ئے قتل کر دیا جاتا ہے اور پولیس کبوتر کی طرح آنکھیں بند کر لیتی ہے ۔اور کسی قسم کی کاروائی اور گرفتاری نہیں کرتی۔۔اس قسم کے واقعات پچھلے چند دنوں میں چارسدہ، ڈیرہ اسماعیل خان، پشاور میں ہو ر ہے ہیں نہ تو کوئی دہشت گرد گرفتار ہوتا ہے اور نہ ہی ٹارگٹ کلنگ کو روکا جا رہاہے۔

صوبائی جنرل سیکرٹری علامہ زاہد حسنین بخاری نے بھی عابد رضا کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت چوہوں کا مقابلہ نہیں کر سکتی۔دہشت گردی کا مقابلہ خاک کرے گی۔ صوبائی حکومت عوام کو ریلیف کے بجائے لاشوں کے تحفے دے رہی ہے۔ہم دہشت گردی کی مذمت کرتے ہیں ان عناصر کو بے رحمی سے کچلنے کا مطالبہ کرتے ہیں ۔




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 14 فروردین 1395 10:12 ق.ظ

کواردو پل تا کت پناہ روڈ کی تعمیری نقائص متعلقہ محکموں کی نااہلی کا واضح ثبوت ہیں علامہ سید محمد عباس رضوی

شنبه 14 فروردین 1395 10:10 ق.ظ

لکھا گیا ھے : پیروان ولایت
بیجها گیا: شیعہ علماء کونسل/ اسلامی تحریک پاکستان ،
1621995_701477879889524_1559343344782258120_n

سکردو(پ۔ر) اسلامی تحریک پاکستان گلگت بلتستان کے صدر علامہ سید محمد عباس رضوی نے کت پناہ تا کواردو پل تک سٹرک کی بربادی کے حوالے سے کہا کہ یہ سٹرک سکردو اور مضافات کی اہم شاہراہوں میں سے ایک ہیں۔ کت پناہ ، رنگا،رزسنا ،کواردو ،قمراہ ، بگاردو حتی کہ روندو کے عوام تک لیے یہ سڑک نہایت اہمیت کا حامل ہیں ۔شہید پل اور کچورا تا سکردو شہر تک موجود روڈ کی خرابی اوراور دیگر ممکنہ سفری مسائل کی صورت میں یہ سڑک سکردو کے لیے متبادل راستہ ہے۔ گزشہ سال کے آواخر میں اس سڑک پر کام شروع ہو گیا لیکن اس سال کے آغاز سے پہلے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکا ۔ لیکن محکمہ تعمیرات عامہ بلتستان اور انتظامیہ خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔ ہزاروں لوگ اس سٹرک پر روزانہ سفر کرتے ہیں لیکن حکام کو اس کا احساس ہی نہیں ہے۔ اس سڑک کی تعمیری نمایاں نقائص متعلقہ محکمہ کی نااہلی کا واضح ثبوت ہیں۔ ہمارا پر ذور مطالبہ ہے کہ محکمہ تعمیرات کے حکام جلد از جلد نوٹس لیں ۔ ساتھ کواردو پل کی حفاظتی صورت حال کو بھی یقینی بنائیں۔ اوور لوڈ گاڑیوں کی رفت آمد سے ایک اور مسئلہ کھڑا ہو جائیگا پھر اسکے حل کے لیے کئی ہفتے ،مہینے لگیں گے۔ متعلقہ ذمہ داران ان عوامی مسائل کو فوری حل کریں۔




نظرات : نظرات
آخری اپڈیٹ : شنبه 14 فروردین 1395 10:10 ق.ظ



کی تعداد صفحات: 38 1 2 3 4 5 6 7 ...